(قذافی بٹ) وزیراعظم عمران خان سے جہانگیر ترین گروپوں کے اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کے ملاپ رادے ہوئے ہیں ، ویسے ہی ہیں۔

خیالات کے مطابق ، عمران خان سے جہانگیرترین گروپوں کے اجلاس میں شہزاد اکبر کا مقابلہ ہوا ، اراکین نے اس کوٹ میں شرکت کی ، جس میں 10 شوگر ملوں کو انکوائری کے لئے منتخب کیا گیا تھا۔ تین جہانگیر ترین ایک شریف فملی اور ایک خسرو بختیار کی ملیں شامل ہیں ، کارروائی جہانگیر کے آخری واقعہ ہورہی ہے اور اومنی گروپ اور ہم اختر فملی کی کسی جگہ پر کارروائی نہیں ہوئی ہے۔

اراکین کی بات یہ تھی کہ شہزاد اکبر نے کابینہ اجلاس میں بتایا تھا کہ بے ضابطہ پائی جاتیوں کے بارے میں یہ معلوم ہوتا ہے کہ ان تین دنوں میں فرانسیسی آڈٹ میں کسی سیکرٹ اکاؤنٹ یا ڈبل ​​انٹریٹ کا کوئی آئی سی نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ شہزاد اکبر 27 جولائی 2020 کو انکوائری کمیشن نے کوئی چیز نہیں منی لانڈرنگ کی اور اس سے قبل ان شاء اڈے کو بھیجا گیا ، لیکن اس کی کوئی رپورٹ سامنے نہیں آئی۔

مزید ز: جہانی ترین پرود عی عمران ران سخل اہم ملاقات متوقع

اس نے خسرو فملی کے ملزوں کے ساتھ دوستانہ سلوک کے ساتھ ملاقات کی ، شہباز شریف کے ساتھ ایک بار ایک واقعہ اور ملازمت پر تین واقعات درج تھے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین کا سارا لین دین مکمل طور پر کاروباری ہے۔ ، ایف آئی آئی اے ، اس سکو کی تیاری سے متعلقہ نویا بنٹا آئ

جہانگیرتین گروپس کے اراکین کے مزید کہنا ہے کہ جے بی ڈبلیو کی کسی بھی شراکت دار نے کبھی کسی بے ضابطگی کی شکایت نہیں کی ہے ، ایف آئی اے اے جے ڈی ڈبلیو کے واقعات میں کسی بھی قسم کی کوئی شہادت اکبر کی ایم اے پر ازخود نوٹس کے تحت کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔


From : www.city42.tv

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You May Also Like

ج انکےیرترین گ گر گر ایرطبہ پر پھاور شو

قذافی بٹ: سیسن کے اجلاس میں پیشقدمی پی ٹی آئی آئی سیزنیر…

ن لیم کے اہم رلنما ٹرانسپورٹ گ

سوال نمبر 42: مسلم لیگ ن 4 پی پی .४ خوشاب س…

سینیق واقعہ سن پہلے ن لکھنے والا بڑا داتا

قافی بٹ: انتبابات میں میڑ پھر اپ سیکنڈ کے ٹگذات نامزدگی یری…

مریم نواز اور ییوپ پر پیپلزپارٹی ارا جارحانہ رد عمل

(سعدیہ خان) پاکستان پیپلزپارٹی وسطی پنجاب جنرل سیکریٹری چوہدری منظور مریم نواز…